Submit your work, meet writers and drop the ads. Become a member
Apr 3
میں ھوں اب بوڑھا مجھے دیکھ تو لو
مغرب کا اب کوڑھا مجھے دیکھ تو لو
میں دیکھ چکا ھوں اٹھتی ھے جوانی
اب روئے جوانی مجھے دیکھ تو لو
ادوار ہیں پنہاں کئی آنکھ میں میری
آنکھوں میں روانی مجھے دیکھ تو لو
تھی روش بھی میری یوں جاتے رہنا
اب بجھتی آنکھیں مجھے دیکھ تو لو
کچھ سمجھ نہ آیا جو کہتا ھوں اب
ھے سمجھ نے مارا مجھے دیکھ تو لو
37
   Melody
Please log in to view and add comments on poems